کراچی میں ‘بلبلا’ زندگی سے لطف اندوز ہونے والے پاکستانی کھلاڑی


کراچی میں ‘بلبلا’ زندگی سے لطف اندوز ہونے والے پاکستانی کھلاڑی

اسکواڈ کے ممبروں کے لئے واک کے لئے مختص الگ الگ پوائنٹس ہیں جبکہ ایک علیحدہ لفٹ بھی استعمال کی جارہی ہے


فوٹو کورسیسی: پی سی بی

پاکستان کے کھلاڑی کراچی میں ‘بائیوبلبل’ کے ساتھ اچھ .ا ایڈجسٹ کر رہے ہیں جہاں اسکواڈ کے ممبروں کو ان کے حالیہ دورہ نیوزی لینڈ کے مقابلے میں بہترین سہولیات فراہم کی جارہی ہیں۔ بہت سے لوگ اس وقت اپنے کنبے کے ساتھ ہیں۔

اسکواڈ کے ممبروں کے لئے واک کے لئے مختص الگ الگ پوائنٹس ہیں جبکہ ایک علیحدہ لفٹ بھی استعمال کی جارہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ، کرکٹرز اپنے جیسے ملک کے بایو بلبلا سے لطف اندوز ہو رہے ہیں اس کے برعکس انہیں نیوزی لینڈ میں جیل جیسے قیدخانے کا سامنا کرنا پڑا۔ سات کھلاڑیوں اور اہلکاروں کے اہل خانہ بھی ساتھ میں ہیں۔

پاکستان اسکواڈ اور جنوبی افریقہ کا دستہ مختلف منزلوں پر مقیم ہے۔ ہوٹل کے احاطے میں روانگی یا پہنچتے وقت سوئمنگ پول کے کنارے کا راستہ استعمال کیا جارہا ہے۔ ناشتہ کسی بوفے میں پیش کیا جاتا ہے جبکہ کمرے میں لنچ یا ڈنر کا حکم دیا جاتا ہے۔

متعلقہ اسکواڈ کے ساتھ رابطے میں آنے والے ہوٹل کے اہلکاروں کو معاملات یا خلاف ورزیوں کی نفی کرنے کے لئے بائیو بلبل کا خود ہی ایک حقیقی حصہ بنایا گیا ہے۔ اہلکار بیڈ شیٹ کو تبدیل کرتے ہیں اور کمروں کی صفائی کا انتظام کرتے ہیں جہاں فی الحال کھلاڑی اور اہلکار رہائش پزیر ہیں۔ اس میں شامل ہر فرد کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لئے کورونا وائرس کی وسیع پیمانے پر جانچ کے بعد عملے کو بائیو سیفٹی بلبلے کا ایک حصہ بنایا گیا تھا۔

ملوث کھلاڑیوں کو اپنے متعلقہ ٹیسٹ کلیئر کرنے کے بعد بائیو بلبل کا ایک حصہ بنایا گیا ہے اور اس وجہ سے انہیں ایک دوسرے کے کمرو دیکھنے کی اجازت ہے۔ تاہم اسکواڈ کے ممبروں کو بغیر کسی ماسک کے اپنے کمرے چھوڑنے کی اجازت ہے۔

منتخب سکواڈ کے ممبروں کی تفریح ​​کے لئے ایک کمرہ بھی نامزد کیا گیا ہے۔ دونوں اطراف سے اسکواڈ کے ممبران ایک دوسرے سے ذاتی طور پر ابھی تک نہیں مل سکے ہیں کیونکہ دونوں اطراف کو مختلف منزلوں پر رکھا گیا ہے۔

ان کے کنبہ کے ساتھ اور نسبتاed آرام دہ ماحول میں ، کھلاڑیوں کو بائیو بلبل کے ساتھ کوئی مسئلہ نہیں درپیش ہے۔

.



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *